Breaking News
Home / Human Rights / جنسی ہراساں

جنسی ہراساں

عورتوں کے حقوق کی بات کرنا واقعتاً ہی ایک اچھا کام ہے لیکن یہاں جو بات سمجھنے والی ہے کہ زیادہ تر بات صرف عورت کے حقوق اور خود مختاری کی کی جاتی ہے جبکہ اس کے برعکس ہونے والی درندگی جو ان خواتین کو ریپ اور جنسی ہراساں کی صورت میں ہمارے معاشرے میں تحفتاً ملتی ہے اسے یکسر نظر انداز کر دیا جاتا ہے.
جو کہ ہر ادارے میں، ہر آفس میں، ہر جاب میں، کاروبار میں، انڈسٹریز میں، سوشل میڈیا یہاں تک کہ رشتہ داروں میں یہ جنسی درندے بیٹھے ہوئے ہیں اور ان کو نکیل ڈالنا اور سبق سکھانا بہت ضروری ہے، اگر آپ خواتین کی خود مختاری کی بات کرتے ہیں.
میں بھی اسی سوچ کا حامی ہوں کہ صرف خواتین کی خود مختاری کی بات مت کرو بلکہ ان درندوں کو انکے منطقی انجام تک پہنچانے کے لیے، ان کی اصلی اوقات یاد کروانی پڑے گی.
اس کے لیے سب سے زیادہ کردار خود خواتین ادا کر سکتی ہیں.
کمزور مت سمجھیں اپنے آپ کو، اگر کوئی لونڈا ایسی گندی سوچ کا مالک نظر آئے تو سمجھ لیں میدان جنگ سج گیا ہے.
پوری منصوبہ بندی کریں ۔ اگر کسی پر اعتماد ہو تو اسے ساتھ ملا لیں
ڈریں نہیں گھبرائیں نہیں مقابلہ کریں وہ اندر سے آپ سے بھی زیادہ کمزور ہے اس خونی درندے کا چہرہ بگاڑ دیں، چہرہ نوچ لیں، مگر اپنی عزت پر داغ مت لگنے دیں۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے