Breaking News
Home / Politics / عمران خان بمقابلہ ہمت خان

عمران خان بمقابلہ ہمت خان

ہمت خان تھانے میں بالکل نیا سب ایس ایچ او منتخب ہو کر آیا تھا اس نے معاشرے میں پولیس کا ظلم اور رشوت دیکھ کر یہ محکمہ جوائن کیا تھا انتھک محنت و تعلیم و تربیت کے بعد اسے کامیابی ملی۔ اپنی ڈیوٹی کے پہلے دن بھی وہ بہت زیادہ مطمئن اور پر اعتماد تھا کہ اب وہ مظلوم کو انصاف دلائے گا، رشوت کا خاتمہ کرے گا فلاں فلاں۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ مگر اسے شاید مکاری کا پتہ نہیں تھا اس لیے کچھ اپنے ہی بڑے افسر اس کے رستے میں رکاوٹ بنے اور زیادہ تر جو دوستی اور حمایت کا دعوی کرتے تھے انہوں نے چالاکی اور مکاری کے ذریعے ہمت خان کو اس کا فرض بھلانے اور انہی کا طرح زندگی گزارنے کے لیے نہایت خوب کردار ادا کیا۔ آج ہمت خان بھی ویسا ہی ہے جیسا ہمارے ذہن عام پولیس کے بارے میں ہوتا ہے اس کی زیادہ وضاحت کی ضرورت نہیں۔

یہ مثال پوری طرح عمران خان پر فٹ آتی ہے اس کی نیت، کردار، ایمانداری، ماضی، جذبہ حب الوطنی اور انتھک محنت دیکھ کر ہمت خان کا نقشہ ذہن میں آتا ہے مگر یہاں صرف یہ بتانا ضروری سمجھتا ہوں کہ وہی مکار و چالاک لوگ ادھر بھی موجود ہیں کچھ حمایت کی آڑ میں، کچھ مذہب کی آڑ میں اور کچھ مخالفت کی۔۔۔۔ان میں سے کچھ نے اپنی اوقات دکھانا شروع بھی کردی ہے۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔میں ان کے نام تو نہیں لینا چاہتا کیوں کہ میں نفرت یا انتشار کی سیاست کا قطعا حامی نہیں مگر اختلاف رائے کا مکمل حق رکھتا ہوں۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ اس لیے اب یہ تو خان صاحب کی دور اندیشی اور سمجھداری ہے کہ وہ ان سے کیسے نپٹتے ہیں باقی مجھے اور مجھ جیسے لاکھوں پاکستانیوں کو عمران خان کی نیت پر کوئی شک نہیں۔

محسن علی

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے